وہ جو رُکا ہوا ہے

بلاگ اے

یہ تو کب سے چل رہا ہے، اور کب سے رکا ہوا ہے۔

وہی مصروف دن، مضطرب شامیں۔

سُنی سنائی باتیں، معلوم ملاقاتیں۔

کبھی یہی حال لیے چل دیے، خود کو کچھ پل دیے۔

پھر وہی برقی قمقمے، دیکھنے دکھانے کی شمعیں۔

کالک من کو اور ملی، نسیں تن کی اور تنی۔

کر لی تھوڑی بہت التجا، پھر یہ جا وہ جا۔

ہاں یہ سب تو چل رہا ہے، پھر کیا ہے جو رُکا ہوا ہے؟

View original post

Advertisements

“نعتِ رسولِ مقبول صلی الله علیھ و صلم”

Qalam and Chai

fedcd39a7b9d5ac79c38c7bde9b4627f

“نعتِ رسولِ مقبول صلی الله علیھ و صلم”

میرا قلم اور تیری شان

خاکِ پا اور ہیرے کی کان

تو محبوبِ رب الوریٰ

بنی نوع انسان کی آن

صورت تیری مثلِ قمر

وصف خارج از بیان

خُلق تیرے سر با سر

فیض کا چشمِ رواں

از لبِ اُم المومنین

“کان خلقھ القرآن”

دشمنوں کے حق میں بھی

عفو کا قلزم بیکراں

سادگی پر مشتمل

تیرا طعام و مکان

تیرے شمائل شجاعت و صداقت

احد و حنین سے آیاں

لاکھ ہوں درود و سلام

اے سرکار دو جہاں

View original post